پاکستان کے اہم علاقے میں انسانوں کو بکرے کے گردے لگا نے کا انکشاف - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

پاکستان کے اہم علاقے میں انسانوں کو بکرے کے گردے لگا نے کا انکشاف


اسلام آباد (قدرت روزنامہ)پاکستان اور ہندوستان دنیا کے 2 ایسے خطے ہیں جہاں اہل علم نہیں بلکہ کوئی بھی ڈھونگی ، جاہل آپ کو من گھڑت روایات، خود ساختہ، جھوٹے مذہبی دعووں کے ذریعے بے وقوف ہیں نہیں پاگل تک بنا کر روحانیت کے نام پر خوب پیسہ بٹور سکتا ہے . بلی کا مزار، بدبو دار پانی کے کچھوے بابا جی ، ہدیہ میں سگریٹ وصول کرنے والی درگاہ، ، محبوب کو چند لمحوں میں قدموں میں لانے والے ایٹمی کالے، پیلے ، نیلے اور بنفشی عملیات ، کالے جادو کے عامل کالی کلکتے والی اور ہنومان کے علاوہ شمشانک دیوی ، کملا دیوی،پدمنی دیوی، لکشمی دیوی، موہنی دیوی، کالا کلوا، گنیش جی ، دیوتا سروپ، ہمادیو وغیرہ چند ایسے نام ہیں جنہیں رٹ کر نو سرباز بڑی آسانی سے کمزور عقیدے کے لوگوں سے سائیکل پہ لا کر خود بڑی بڑی گاڑیاں تک بنا لیتے ہیں .

پاکستان میں اس حوالے سے معروف اینکر پرسن اقرار الحسن نے کثیر تعداد میں جعلی بابوں ، پیروں اور فقیروں کو بے نقاب کرکے معصوم ذہنیت کے لوگوں کو ان کے ساحرانہ و شاطرانہ چنگل سے چھڑوایا تاہم بلاشبہ حرام کی کمائیوں کی اس کالی شاخ میں اس قدر زرِ کثیر ہے کہ زرا سی ذہنی مکاری کا حامل شخص اسی راستے پر چلنے میں عافیت جانتا ہے .اس حوالے سے اقرار الحسن کے حالیہ پروگرامز میں سے ایک کو دیکھا تو دنگ رہ گیا . سندھ کے ایک گائوں میں ایک بابا جی نے اپنا روحانی کاروبار یوں شروع کیا کہ وہ انسان کو بکرے کا گردہ لگاتے ہیں وہ بھی محض 5ہزار میں . مزید اس وڈیو میں ملاحظہ کریں :

..

مزید خبریں :

Load More