پاکستانیوں کے بیرون ملک اکاؤنٹس ،پراپرٹیزکیس،سپریم کورٹ علیمہ خان کی جائیداد کی تفصیلات پیش نہ کرنے پر برہم،چیئرمین ایف بی آر کو توہین عدالت کا نوٹس جاری | Daily Qudrat - Latest Urdu News website
Can't connect right now! retry

پاکستانیوں کے بیرون ملک اکاؤنٹس ،پراپرٹیزکیس،سپریم کورٹ علیمہ خان کی جائیداد کی تفصیلات پیش نہ کرنے پر برہم،چیئرمین ایف بی آر کو توہین عدالت کا نوٹس جاری


اسلام آباد(قدرت روزنامہ)سپریم کورٹ آف پاکستان نے پاکستانیوں کے بیرون ملک اکاﺅنٹس سے متعلق کیس میں علیمہ خان کی جائیداد کی تفصیلات پیش نہ کرنے پر چیئرمین ایف بی آر اورممبرانکم ٹیکس کوتوہین عدالت کانوٹس جاری کردیا اور علیمہ خان کی جائیداد کی تفصیلات طلب کر لیں.تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے پاکستانیوں کے بیرون ملک اکاﺅنٹس سے متعلق کیس کی سماعت کی،عدالت نے استفسار کیا کہ بتایاجائے ایف بی آرنے اب تک کیاکارروائی کی، علیمہ خان کاجواب کہاں ہے؟ممبر ایف بی آر نے کہا کہ جب بیان حلفی میں تضادات سامنے آئے توہم نے آڈٹ شروع کردیا،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ آپ نے آڈٹ کیوں کراناتھا؟ہم نے ٹیم بنائی اورکہاتحقیقات کرکے جواب دیں،حبیب اللہ خان نے کہا کہ ہم قانون کے مطابق چلناچاہتے تھے،چیف جسٹس نے کہا کہ آپ نے سارے عدالتی حکم نامے کوخراب کردیا،ایف آئی اے نے آپ کی اتنی مددکی ہے،آپ نے سارے کام کوتاخیرمیں ڈال دیا.

ضرور پڑھیں: خالی پیٹ لہسن کھانے کے بعد آپ کے جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے؟جان کر آپ کی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

سپریم کورٹ نے ایف بی آرکے جواب جمع نہ کرانے پراظہاربرہمی کیا،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیوں نہ ممبر لینڈریونیوحبیب اللہ خان کومعطل کردیں؟ ہم نے اس معاملے پرمشترکہ تحقیقاتی ٹیم بنائی تھی.چیف جسٹس نے ممبر ایف بی آر سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ کوشوکازنوٹس کردیتے ہیں،3 روزمیں جواب دیں،آپ نے معاملے کومعمول کی کارروائی بنادیا،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ 3 ہزارارب روپے کی بیرون ملک جائیدادیں ہیں،آپ کوان لوگوں سے ہمدردی ہے؟سٹیٹ بینک آف پاکستان نے عدالت میں رپورٹ پیش کردی.چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ سینیٹروقاراحمد کے معاملے پرکیاکیا؟بتایاجائے پاکستانیوں کاپیسہ کیسے منتقل ہوا؟چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ ہمارافیلڈسٹاف کام کررہاہے،جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ فیلڈمیں جاکرآڈٹ کرناتھا،چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ ہم نے کہاتھاتفصیلات دیں،چیئرمین اورممبرایف بی آرکوتوہین عدالت کانوٹس کردیتے ہیں،دونوں سے 3دن میں جواب مانگ لیتے ہیں، عدالتی حکم پربالکل بھی عمل نہیں کیاگیا. چیف جسٹس نے ممبرایف بی آر سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ ایف آئی اے نے آپ کوتحقیق کرکے دی،آپ نے تحقیقات کوسردخانے میں ڈال دیا،ممبرایف بی آرحبیب اللہ خان جواب دیں.

..

ضرور پڑھیں: چوہدری نثار کو پنجاب اسمبلی کی نشست سے ڈی سیٹ کرنے کی درخواست، لاہور ہائیکورٹ نے فیصلہ سنا دیا